بائیولوجی کا ٹیچر اور پرندے کی ٹانگ

بائیولوجی کے ٹیچر نے بچے کو ایک پرندے کی ٹانگ دکھائی اور پوچھا ‘  یہ کس پرندے کی ٹانگ ہے ”
بچہ ‘  ” مجھے نہیں پتا ”
ٹیچر ‘  تم فیل ہو، اپنا نام بتاؤ
بچہ ‘  میریاں لتاں دیکھ کے دس

ایک بلاؤ تو چار آ جائیں

لڑکی ‘  اب میں یہ تعلق نہیں رکھنا چاہتی ، میں جا رہی ہوں ہمیشہ کے لیے
لڑکا ‘  ہاں ہاں جاؤ، ویسے بھی بس ، ٹرین اور لڑکی ایک جاتی ہے تو دوسری آتی ہے
لڑکی ‘  رکشا ، ٹیکسی ، اور لڑکے ایک بلاؤ ، چار آتے ہیں.

پولیس کی جاب

پولیس کی جاب
ایک شخص پولیس میں ملازمت کا امیدوار تھا
افسر نے پوچھا: ابراہیم لنکن کو کس نے قتل کیا تھا؟
شخص کچھ دیر سوچ کر بولا: مجھے اس کا جواب دینے کے لیے کچھ وقت چاہیے
افسر: ضرور ، آپ جائیں اور کل سہی سہی جواب لے کر آیں
شخص گھر آیا تو بیوی نے پوچھا : ملازمت مل گئی
وہ شخص بولا : معلوم تو یہی ہوتا ہے ، فورن ہی انہوں نے ایک قتل کا کیس دے دیا ہے اور قاتل کی تلاش پر لگا دیا ہے … ہا ہا ہا ہا 

چور کی معصومیت

چور کی معصومیت
ایک چور کے گھر پولیس نے چھاپا مارا
چور اپنی جان بچانے کے لیے جھولے میں چھپ گیا اور چوسنی منہ میں لے لی
پولیس ‘  یہاں کیا کر رہے ہو
چور ‘  دودو پی رہا ہوں
پولیس ‘  شاباش جلدی جلدی دو دو پی لو ، پھر پیپ پیپ میں گھومنے چلیں گے 

تھوڑے تھوڑے کھا

تھوڑے تھوڑے کھا
ایک نیا سرائیکی شادی شدہ جوڑا پارک میں بیٹھا چپس کھا رہا تھا
آنکھوں میں آنکھیں ڈالے لڑکی شرما کر بولی ‘  تسا میکو اتنا غور نال کیوں ڈھیدھے پے او
لڑکا ‘  مریں، تھوڑے تھوڑے کھا ، سارے دبی ویندی ایں

مرغی اور کوا

مرغی اور کوا
مرغی کا کوے سے رشتہ ہو گیا
جب مرغے کو پتا چلا تو وو مرغی کے پاس گیا اور بولا  ‘  میری آواز پورے شہر میں گونجتی ہے ، مرغیوں کی یونین کا پریذیڈنٹ بھی ہوں
مرغی ‘  میں تمھارے جذبات کی قدر کرتا ہوں لیکن امی ابو کی خواہش ہے لڑکا ایئر فورس میں ہو

کون تھی وہ

کون تھی وہ
میاں بیوی ایک ہوٹل میں گۓ . راہداری میں ایک عورت نے میاں کو ہیلو کہا
بیوی نے تھوڑا آگے جا کر غصے سے پوچھا ” کون تھی وہ ”
میاں ‘  جھنجھلا کر ! تم ابھی تنگ مت کرو ، میں پہلے ہی بہت پریشان ہوں کہ وہ بھی یہی پوچھے گی