پپو کی چھترول

آج میری چھترول ہوئی، میں اپنی گلی سے گزر رہا تھا تو ہمارے  محلے کی آنٹی   پوچھتی ہیں کہ بیٹا کیسے ہو؟۔

میں نے کہا: آنٹی جی! آپ کی دعا سے سیٹ ہوں۔

اب مجھے کیا معلوم کہ “دعا” ان کی بیٹی کا نام تھا!!!۔

پاگل کی اذدواجی زندگی

ڈاکٹر پاگل سے: تم پاگل کیسے  ہوئے؟۔

پاگل: میں نے ایک بیوہ سے شادی کی ، اُس کی جوان بیٹی سے میرے باپ نے شادی کی، میرا باپ میرا داماد بن گیا، میری وہی بیٹی میری ماں بن گئی، ان کے گھر بیٹی پیدا ہوئی ، تو وہ میری بہن بن گئی مگر میں اس کی نانی کا شوہر تھا اس لیے وہ میری نواسی ہوئ، اور اس طرح میرا بیٹا اپنی دادی کا بھائی بن گیا ، اور میں اپنے بیٹے کا بھانجا۔۔۔

ڈاکٹر:چل اُٹھ جا ، کھوتے دیا پترا، منوں وی پاگل کرنا اے!!!۔

ایک لڑکا بہت کمزور تھا

ایک لڑکا بہت کمزور تھا جسمانی طور پر بلکل ہڈیوں کا ڈھانچہ وہ بازار سے گزر رہا تھا ایک بہت ہی امیر لڑکی اس کے پاس اپنی قیمتی کار میں آکر رکی ۔ اور اس کو اپنے ساتھ اپنے گھر چلنے کی آفر کرنے لگی . بیچارہ حیران بھی تھا اور خوش بھی کہ اتنی امیر لڑکی اتنی

خوبصورت لڑکی کیا قیامت ڈھا رہی ہے کاش اس سے میری شادی ہوجاۓ

تو میں بھی امیر ہو جاؤں اور خوب عیش کروں ۔ وہ راضی ہوگیا اور لڑکی کے ساتھ اس کے گھر چلا گیا
اسکا بنگلہ بہت عالیشان تھا، بہت سارے نوکر،
چاکر بھی تھے لڑکی نے اسے لے جاکر ڈراںٔنگ روم میں بٹھا دیا اور انتظار
کرنے کا کہا۔۔۔ اس کے دل میں لڈو پھوٹ رہے تھے ،
مستقبل کے خوبصورت خواب کھلی آنکھوں سے دیکھ رہا تھا…
کچھ دیر کے بعد وہ لڑکی اپنے دو بچوں کے ساتھ آئی اور بچوں سے بولی دیکھو، بچوں اگر نیڈو نہیں پیو گے تو ایسے ہی ہو جاؤ گے………