Urdu jokes 2020

Urdu jokes 2020

دو شاعر بازار میں لڑ پڑے اور ایک ہنگامہ کھڑا کر دیا۔
پولیس نے دونوں کو تھانے بلوالیا۔
تھانے دار: تم دونوں کس بات پر لڑ رہے تھے؟۔
پہلا شاعر: اس نے مجھے سرِعام جھنجھوڑا۔
دوسرا شاعر: اس نے مجھے کپڑوں کی طرح مروڑا۔
پہلا شاعر: اس نے میرا سر پھوڑا۔
دوسرا شاعر: اس نے میرا منہ توڑا۔
تھانے دار اُن کی شاعرانہ لڑائ سے تنگ آگیا اور دونوں سے ہاتھ باندھ کر بولا:
خدا کے لئے یہاں سے جاؤ۔ میں نے تم دونوں کو چھوڑا۔